حاجی عبدالرشید ساجد صدر مرکزی انجمن تاجران راجن پور کا انٹرویو ،

ضلع راجن پور کے نمایاں متحرک اور غریبوں کے ہمدرد سماجی کارکن اور بزنس مین ہونے کے ساتھ ساتھ حاجی عبدالرشید ساجد صدر مرکزی انجمن تاجران ضلع راجن پور اور نائب صدر آل پاکستان انجمن تاجران پاکستان ہیں راجن پور میں فلڈ ہوں یا کوئی بھی موقع ہو انجمن تاجران کا پلیٹ فارم رفائے عامہ کے لیے ہر وقت کھلا رہتا ہے اس پلیٹ فارم کا مقصد تمام تاجر برادری کے ساتھ ساتھ اہلیان راجن پور کے بنیادی مسائل کے حل کے لیے مل کر کوشش کرنا اور ارباب اختیار سے ان مسائل کے حل کے لیے اپنی آواز پہنچانا ہے

حاجی عبدالرشید ساجد کی پسندیدہ آفیسر غازی امان اللہ سابقہ ڈی سی او راجن پورہیں کیونکہ وہ بھی عوام کا درد رکھنے والے آفیسر تھے انہوں نے راجن پور شہر کا نقشہ تبدیل کردیا ہے اور راجن پور کو ترقی یافتہ شکل میں روشناس کرایا غازی امان اللہ اپنے وسیب سے بے حد پیار کرتے تھے اس لیے انہوں نے تمام تر ترقیاتی منصوبے اپنی ذاتی دلچسپی سے اپنی نگرانی میں پائیہ تکمیل تک پہنچائے ،

محترمہ بینظیر بھٹو صاحبہ حاجی عبدالرشید ساجد کی پسندیدہ سیاسی شخصیت اور پسندیدہ سیاسی لیڈر ہیں کیونکہ وہ واحد لیڈر تھیں جن میں عوام کا درد نمایاں دکھائی دیتا ہے ،
اب کچھ حاجی صاحب کی ذاتی زندگی کے بارے میں انہوں نے راجن پور کے ایک کاروباری گھرانے آرائیں برادری کے حاجی محمد رمضان کے گھر آنکھ کھولی ابتدائی تعلیم سرکاری سکولوں سے حاصل کی ان کے پسندیدہ استاد عبدالحکیم خادم جبکہ کلاس فیلوز میں محبوب احمد بھٹہ ، فیاض احمد ، حاجی سیف الرحمان اور نصراللہ قریشی نمایاں ہیں ، ایف اے کے بعد کاروبار میں آگئے والد کے ساتھ جنرل سٹور پر کام شروع کیا اسی سال اپنی ذاتی کاروباری زندگی کا آغاز کیا اور 1985ء میں پہلی ڈسٹری بیوشن مچلز فروٹ فارم کی حاصل کی اور سائیکل پر پورے راجن پورمیں خود مارکیٹ کرتے اور دوکانداروں تک خود سامان سپلائی کرتے ، 1986 ء میں نیشنل فوڈز کی ڈسٹری بیوشن حاصل کی جو کہ تاحال ان کے پاس ہے کاروبار میں دیانتداری اور محنت کے ساتھ ساتھ اللہ پر توکل کرنا ان کا فارمولا اول رہا ہے ، ملازمین کے ساتھ شفقت سے پیش آنا ان کا ہمیشہ وطیرہ رہا ، کاروباری منزلیں طے کرتے ہوئے انہوں نے 2012 میں یونی لیور پاکستان اور پی اینڈ جی جیسی ملٹی نیشنل کمپنیوں کی ڈسٹری بیوشن بھی لے لی اور دن میں اٹھارہ گھنٹے خود اپنی نگرانی میں ملازمین سے کام لینے پر اکتفا رکھا اور کاروبار میں ہمیشہ ترقی کو اپنا شعارمحنت کو بنیادی زینہ جانا ،
کاروبار کے بعد ان کی سماجی زندگی کے چند پہلو کچھ یوں ہیں حاجی صاحب نے اپنی فلاحی اور سماجی زندگی کا آغاز 2010ء کے فلڈ کے بعد راجن پور کی عوام کے لیے اس وقت کے ڈی سی او جناب غازی امان اللہ کے ساتھ مل کر فلاحی کاموں میں دن رات ایک کر کے کیا ، انہوں نے فلڈ 2010ء کے بعد فلاحی کیمپوں ، این جی اوز اور فلاحی تنظیموں کے ساتھ ملکر راجن پور کی عوام کے لیے انجمن تاجران کے پلیٹ فارم سے اپنا کردار ادا کیا ، اسی وجہ سے اب کوئی بھی تہوار ہو یا کوئی ایونٹ انجمن تاجران کی نمائندگی کے لیے حاجی عبدالرشید ساجد سر فہرست ہوتے ہیں ،
انجمن تاجران ، حاجی صاحب نے انجمن تاجران کو 1993ء میں بطور سیکرٹری جنرل جوائن کیا اور بعد ازاں جون 2015ء میں مرکزی انجمن تاجران کے صدر ضلع راجن پور منتخب ہوئے اس کے ساتھ ساتھ نائب صدر جنوبی پنجاب بھی رہ چکے ہیں ، ان کی سربراہی میں انجمن تاجران نے دن دوگنی رات چوگنی ترقی کی اور اپنا دائرہ احباب وسیع کیا راجن پور سٹی سے نکل کر اب انجمن تاجران کا نام قصبہ قصبہ گاؤں کاؤں ہے ، اور حاجی عبدالرشید ساجد کی ایک آواز پر لبیک کہنے والے تاجروں کی تعداد اب سینکڑوں ہوچکی ہے ، حاجی صاحب تاجربرادری میں رہ کر تمام ورکز کے مسائل کو حل کرنے کے لیے ہمیشہ کوشاں رہے ہیں ، یہی وجہ ہے ان کی ٹیم میں دن بہ دن اضافہ ہو رہا ہے اور آئے دن کوئی نہ کوئی تاجر ایسوسی ایشن شمولیت کا اعلان کرتے ہیں ،
جاری ہے

رابطہ نمبر : 03336444089

ہماری خبر پر نوٹس والے اداروں سے گزارش ہے کہ یہ ابتدائی معلومات اور تجزیہ کے طور پر اطلاع فراہم کرنا ہم اپنا فرض سمجھتے ہیں ، اس پر ایکشن لینے سے پہلے ہمارے قوانین اور پرائیوسی پالیسی کو ضرور پڑھ لیں ،مزید معلومات کے لیےدیئے گئے نمبر پر رابطہ کریں ، شکریہ

اپنا تبصرہ بھیجیں