نظام مصطفی کے بغیر پاکستان میں امن قائم نہیں ہوسکتا، پیر سید علی ناصر بخاری مہروی

previous arrow
next arrow
ArrowArrow
Slider

راجن پور ( بیورورپورٹ) پاکستان میں قیام امن کے لیے انتہائی ضروری ہے کہ پاکستان میں نظام مصطفی رائج العمل کیا جائے ، ہمارا کسی سے اختلاف نہیں ہے ، ستر سالہ تاریخ میں پہلا دھرنا تھا جس کا مقصد زاہد حامد کا استفی لینا تھا جو اس کے مستفی ہونے پر ختم ہوا اس کے علاوہ جتنے بھی دھرنے ہوئے ہیں ان کو کامیابی نہیں ملی ،تحریک لبیک یارسول اللہ اور تحریک لیبک پاکستان کا کسی سے کوئي اختلاف نہیں ہو ہر کسی کے جائز موقف کا احترام کرتے ہیں ،راجن پور میں پہلی مرتبہ دھرنا لبیک یارسول اللہ کا ہوا تو ہزاروں لوگوں نے شرکت کی جس کی سربراہی میں نے خود کی ، اس کے بعد ڈیرہ غازی خان میں بھی راجن پور کی نمائندگي کی اور فیض آباد میں راجن پور سے کثیر تعداد میں ساتھیوں کی شرکت کو یقینی بنایا ، ان خیالات کا اظہار پیر سید علی ناصر بخاری مہروی نے آواز 92 میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ، اس موقع پر امجد ملک ، ولید خان پتافی ، مجاہد خان گوپانگ و دیگر موجود تھے ،

رابطہ نمبر : 03336444089

ہماری خبر پر نوٹس والے اداروں سے گزارش ہے کہ یہ ابتدائی معلومات اور تجزیہ کے طور پر اطلاع فراہم کرنا ہم اپنا فرض سمجھتے ہیں ، اس پر ایکشن لینے سے پہلے ہمارے قوانین اور پرائیوسی پالیسی کو ضرور پڑھ لیں ،مزید معلومات کے لیےدیئے گئے نمبر پر رابطہ کریں ، شکریہ

اپنا تبصرہ بھیجیں